Jump to content
IslamicTeachings.org

Bint e Aisha

Moderators
  • Content Count

    1542
  • Joined

  • Last visited

  • Days Won

    82

Everything posted by Bint e Aisha

  1. جزاك الله خيرا for all your posts and reminders.
  2. The aim of this channel is to provide information regarding depression from the medical and Islamic perspectives. https://t.me/do_not_be_depressed
  3. Khilaaf vs Ikhtilaaf Does every opinion count in the Deen? Does a Shaykh saying something different to other Ulamaa automatically make it a valid difference of opinion?
  4. #دوسری_قسط 📬 💌 باب العبر 💌 📬 ╮•┅══ـ❁🏕❁ـ══┅•╭ ❁باب العبر❁ عام طور پر علماء ومشائخ اپنی تقاریر اور مجالس میں اعمال اور اذکار واوراد کے فضائل ہی بیان کرنے پر قناعت کرتے ہیں اور مختلف پریشانیوں اور آفتوں کا علاج مختلف وظائف اور کچھ سورتوں کا پڑھ لینا بتا دیتے ہیں، یہی وجہ ہے کہ لوگ جِنّات بهگانے کے لیے اور مصائب وآفات سے بچنے کے لیے قرآن خوانیوں کی مجالس تو کرتے ہیں لیکن قرآن کریم کے احکام کی علانیہ بغاوت کرتے ہیں جس کی وجہ سے وہ مصائب اور پریشانیوں کے جال میں اور زیادہ پهنستے چلے جاتے ہیں- مصائب اور پریشانیوں کا جو علاج اللہ تعالٰی اور اس کے رسول ﷺ نے بیان فرمایا ہے اسے نہ اس دور
  5. تصوف کے بارے میں پائے جانے والے سوالات اور اُن کے جوابات ٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭ دوسری قسط ٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭ صوفیائے کرام کی ضرورت کیوں پیش آتی ہے؟ ٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭ نبی کریمﷺ کی جن چار بنیادی ذمہ داریوں کو قرآن پاک کی سورہ آ لِ عمران آیت۱۶۴ میں بیان کیا گیاہے،وہ یہ ہیں: (۱) قرآن پاک کی تلاوت (۲) قرآن پاک کی تعلیم (۳) حِکمت کی تعلیم (۴) تزکیہ (یعنی عقائد اور اعمال کی اصلاح کرنا) حضور ﷺ کی وفات کے بعد یہ چاروں کام صحابہ کرامؓ نے سر انجام دیئے اور اُن کے بعد تابعین اور تبع تابعین نے۔ بعد میں ان میں سے ہر ذمہ داری کو سر انجام
  6. Imaam Ibn al-Qayyim said: يَقول ابن القيم رحمه الله – الحُزنُ يُضعِفُ القَلب ، ويُوهن العَزم ويَضُر الإرادَة ، ولا شيءَ أحب إلى الشيطان مِن حُزن المؤمن “Grief weakens the heart and determination, & hurts the will ; and nothing is more beloved to Shaytan than a sad believer”. From his book Tareequl Hijratain [طريق الهجرتين1/418]
  7. ‘Allāmah Qāsim ibn Qutlūbughā (802 – 879 H), the chief Hanafī jurist and muhaddith of his time, mentions in a treatise he wrote on Tarāwīh and Witr: Al-Hasan [ibn Ziyād] (d. 204 H) narrated from Abū Hanīfah: The standing [in prayer] of Ramadān is Sunnah [Mu’akkadah] which should not be left out. The people of each masjid should pray it in their masjid, on every night [of Ramadān] in five tarwīhahs [sets of four rak‘ahs]. A man leads them, reciting in every rak‘ah ten verses or so, making salām in every two rak‘ahs. Every time he prays one tarwīhah, he waits between two tarwīhahs the
  8. RAMADHĀN REMINDER Ibn Rajab rahimahullāh says: لم لا يرجى العفو من ربنا وكيف لا يطمع في حلمه وفي الصحيح: أنه بعبده أرحم من أمه: {قُلْ يَا عِبَادِيَ الَّذِينَ أَسْرَفُوا عَلَى أَنْفُسِهِمْ لا تَقْنَطُوا مِنْ رَحْمَةِ اللَّهِ إِنَّ اللَّهَ يَغْفِرُ الذُّنُوبَ جَمِيعاً} [الزمر: 53] . فيا أيها العاصي وكلنا ذلك لا تقنط من رحمة الله بسوء أعمالك فكم يعتق من النار في هذه الأيام من أمثالك فأحسن الظن بمولاك وتب إليه فإنه لا يهلك على الله (الا) هالك. Why shouldn't we hope for forgiveness from our Lord and why shouldn't we long for His Forbearance while in the authentic [collections o
  9. #پہلی_قسط 📬 💌 باب العبر 💌 📬 ╮•┅══ـ❁🏕❁ـ══┅•╭ حرفِ آغاز: عام طور پر لوگوں کا مزاج یہ بن گیا ہے کہ ان کی اصلاح ورہنمائی کے لئے انبیاء علیہم الصلوٰۃ والسلام کے واقعات بیان کرو تو کہتے ہیں: ”یہ تو انبیاء کرام کے قصے ہیں-“ صحابہ کرام رضی اللہ عنهم کا تذکرہ کرو تو جواب ملتا ہے: ”اجی وہ تو صحابہ کرام تهے-“ اولیاء کرام رحمهم الله تعالٰی کا ذکر کیا جائے تو جواب یہ ہوتا ہے: ”صاحب! وہ تو اولیاء اللہ تهے، ہم ان تک کیسے پہنچ سکتے ہیں؟“ "وہ پرانے لوگ تهے جو کر گئے کر گئے، اب ان جیسی زندگی بنانا کسی کے بس میں نہیں-" یہ بموجبِ نصِ قرآن: لا َیُکَلِّفُ اللہ ُنَفْسًا اِلا َّوُسْعَهَا
  10. "Who Created God Then?" by Shaykh Mohammad Yasir al-Hanafi Who created God then? This is the outdated cliché of an atheist. Many classical scholars have addressed this question. In the books of creed, the concept is known as ‘Burhān al-Tatbīq’, where the question of Allāh’s existence is discussed. For example, the famous creed of Imām al-Taftāzānī *Sharh al-’Aqā’id al-Nasafiyyah* - that is taught in the Islamic institutes - also discusses this concept. From the English books, Hamza Tzortzis’s book, which I encouraged people to read yesterday, elucidates the answer to this ques
  11. تصوف کے بارے میں پائے جانے والے سوالات اور اُن کے جوابات ٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭ پہلی قسط ٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭ تصوف کیا ہے؟ ٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭ ” تصوف“ دین کاایک اہم شُعبہ ہے جس میں انسان کے”دِل“ اور ”نَفس“ کو پاک اورصاف کرکےاس کی اصلاح کی جاتی ہےتاکہ اللہ تعالیٰ کامستقل دھیان اوررَضا حاصل ہوجائے۔ اصلاح کے دواجزاء ہیں: (1) ظاہری اصلاح (2) باطِنی اصلاح 1. ظاہری اصلاح سے مُراد یہ ہے کہ >> ظاہری اعضاء سے صادِر ہونے والے گناہ (مثلاًجھوٹ،غیبت ،چوری،زِنا وغیرہ) چُھوٹ جائیں اور >> عبادات ،معاملات اور معاشرت(یعنی زندگی کے ہر شعبے میں) میں اچھی صفات اپ
  12. تصوف کے بارے میں ہمارا معاشرتی رویہ اور چند ضروری گذارشات تَصَوُّف( پیری مریدی ، طریقت، صُوفی ازم ) کے بارے میں ہمارے معاشرے میں دو انتہائیں (Extremes) پائی جاتی ہیں۔ایک طبقہ تو تصوف سے وابستہ ہوکر اپنے مشائخ کو (نعوذ باللہ) خدائی اختیارات کی حامل شخصیات تصور کرکےاُن کے ہر قول و عمل کو قرآن و حدیث ہی کی طرح درست اورقابل تقلید تسلیم کرتا ہے ، چاہے وہ قرآن و سنت اور اجماع امت کے خلاف ہی کیوں نہ ہو۔ دوسرا طبقہ تصوف کو سِرے سے دین کا حصہ تسلیم کرنے کے لئے تیار ہی نہیں اور تربیت و اصلاح کے اس نظام کو بدعات کا مجموعہ سمجھتا ہے۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ تصوف کے اصل شرعی تصوّر ک
  13. الْحَمِيدُ Translation الْحَمِيدُ is translated as The Praised One and The laudable. Definition This word comes from حمد meaning praise. It is that Being Who has made mandatory for all creation to praise Him. Human beings do so voluntarily and all other forms of creation does Tasbeeh of Allah ta’ala. He is deserving of praise for all His countless bounties upon all the creation all the time, seen and unseen. Allah ta’ala mentions in the Qur’an that if you wanted to count the Ni’mat of Allah ta’ala, you cannot do so. Allah ta’ala is Hameed in
  14. الْوَلِيُّ Translation الْوَلِيُّ is translated as The Protecting Friend and The Near Guardian. A Scholar mentions that this is a hard word to translate as it has a lot of meaning in it. وَلِيّ means patron / friend with the concept of protection similar to الْحَافِظُ and also has the concept of love similar to الْوَدُودُ. Definition It is defined as Allah ta’ala being the One Who is helping us. It is mentioned in the Qur’an, اللَّهُ وَلِيُّ الَّذِينَ آمَنُوا يُخْرِجُهُمْ مِنَ الظُّلُمَاتِ إِلَى النُّورِ Allah is the Wa
×
×
  • Create New...