Jump to content
IslamicTeachings.org
Bint e Aisha

دنیا کی سعادت مند عورت

Recommended Posts

🌷 اے اونچے مقام والی عورت!🌷


 رُبَّ أمرٍ تَتَّقِیْهِ۔۔۔۔ جَرَّ أَمْراً تَرْتَجِیْهِ

شعر کا مفہوم ہے کہ "کبھی ایسا بھی ہوتا ہے کہ جس کام سے آپ کو خدشہ اور ڈر ہوتا ہے وہ اپنے ساتھ بھلائی بھی لے آتا ہے جس کی آپ کو چاہت ہوتی ہے۔"

اے سچی مسلمان عورت! اے اللہ کی طرف رجوع کرنے والی مومن عورت! آپ کھجور جیسی بن جائیں، جیسے کھجور گندگی سے دور اور بلندی پر ہوتی ہے جب کوئی اس کو پتھر مارتا ہے تو اس سے پھل گرتے ہیں اور وہ گرمی سردی میں سرسبز ہی رہتی ہے اور نفع پہنچانے والی ہوتی ہے۔

اے مسلمان عورت! آپ اپنے آپ کو لغو باتوں سے بچا کر اونچے مقام والی بن جائیں اور ہر اس چیز سے اپنی حفاظت کریں جس سے آپ کی فطری شرم و حیا ختم ہو۔ آپ اپنی باتوں کو ذکر بنائیں، اپنی نظر سے عبرت پکڑیں اور خاموشی میں اچھی سوچ اپنائیں، پھر آپ کو سعادت وراحت ملے گی اور زمین پر آپ کو قبولیت ملے گی۔ لوگوں میں آپ کو اچھی تعریف اور سچی دعا حاصل ہوگی۔ اللہ تعالی آپ کی پریشانی کے بادل اور مصائب کے پہاڑ دور فرما دیں گے۔ 

اہل ایمان کی دعاؤں سے آپ پُرسکون سو جائیں اور انہی کی تعریف پر صبح کو بیدار ہوں، پھر آپ کو معلوم ہوگا کہ سعادت بینک بیلنس جمع کرنے میں نہیں بلکہ اللہ تعالیٰ کی اطاعت میں ہے اور خوبصورت لباس میں نہیں بلکہ خدمتِ خلق میں ہے۔

(ماخوذ از: دنیا کی سعادت مند عورت)

(ہمیں چاہیے کہ اللہ تعالیٰ سے اور اپنے آپ سے ناامید مت ہوں، زندگی میں ایسے مسائل پیش آتے ہیں جن کے سامنے ہمت جواب دے جاتی ہے، لیکن ان مسائل کو خود پر غلبہ نہ پانے دیں، اور ان مسائل سے نمٹنے کے لیے اللہ تعالٰی سے مدد طلب کریں اور اچھی تدبیر اختیار کرنے کی کوشش کریں۔)


تحریر: راشد محمود عُفِیٙ عٙنْہ

(سکونِ  دل) 

http://telegram.me/AuratonKeyMasail
*===========================*
http://www.facebook.com/AuratonKeyMasail
*==========================*

Share this post


Link to post
Share on other sites

🌷 پریشانیاں اور تکلیفیں ہمیشہ نہیں رہتیں🌷


 أتحسب أنّ البؤس للمرء دائم۔۔۔۔ ولو دام شیئٌ عدّہ الناس فی العجب

شعر کا مفہوم ہے کہ "کیا آپ یہ سمجھتی ہیں کہ انسان پر آئی ہوئی پریشانی ہمیشہ رہتی ہے؟ اگر وہ ہمیشہ رہتی تو لوگ اسے عجیب سمجھتے۔" 


زندگی کو محبت اور امید کی نظر سے دیکھیے، کیونکہ زندگی خدائی ہدیہ ہے۔ آپ اس خدائی ہدیہ کو قبول کیجیے اور خوشی سے رہیے۔ صبح صادق کو اس کی خوبصورتی کے ساتھ قبول کیجیے، رات کو اس کے سکون و وقار کے ساتھ قبول کیجیے، سانس کے ذریعے ہوا کی خوشی اور خوبصورتی حاصل کیجیے۔ 


اس زندگی کو عبرت کی نظر سے دیکھیے، اللہ تعالی کی اس وسیع زمین پر پھیلی ہوئی نعمتوں سے فائدہ اٹھائیے۔ خوشبودار پھول، شبنم، سرسبز باغات، دھوپ کی تپش، چاند کی روشنی، یہ سب خدائی عطیات ہیں، انہیں اللہ تعالی کی اطاعت اور اس کا شکر ادا کرنے اور اسی کی حمد و ثناء میں معاون بنائیے۔ 


خیال کیجیے! غم اور پریشانی آپ کو نہ جکڑ لیں، ورنہ آپ خدائی نعمتوں کو نہ دیکھ سکیں گی۔ اللہ تعالی نے ان نعمتوں کو اسی لیے دیا ہے کہ انہیں اللہ کی اطاعت میں مددگار بنایا جائے۔ اللہ تعالی فرماتے ہیں: 

 *یٰۤاَیُّھَا الرُّسُلُ کُلُوۡا مِنَ الطَّیِّبٰتِ وَ اعۡمَلُوۡا صَالِحًا ؕ اِنِّیۡ  بِمَا تَعۡمَلُوۡنَ عَلِیۡمٌ.* 
ترجمہ: اے پیغمبرو ! پاکیزہ چیزوں میں سے (جو چاہو) کھاؤ اور نیک عمل کرو۔  (سورہ المؤمنون:51)


(ماخوذ از: دنیا کی سعادت مند عورت)


(لہٰذا ہمیں چاہیے کہ غم ہو یا خوشی، ہر حال میں اللہ رب العزت سے اپنا تعلق مضبوط بنائیں۔ اس کی نعمتوں پر شکر ادا کریں اور غم کے دور کرنے میں اسی سے مدد طلب کریں۔)


تحریر: راشد محمود عُفِیٙ عٙنْہ

(سکونِ  دل) 

http://telegram.me/AuratonKeyMasail
*===========================*
http://www.facebook.com/AuratonKeyMasail
*==========================*

Share this post


Link to post
Share on other sites

🌷 آپ کا گھر عزت و محبت کی مملکت ہے🌷


 قُل ھو الرحمٰن آمنّا بہٖ۔۔۔۔۔ واتبعنا ھادیاً من یثربٖ

شعر کا مفہوم ہے کہ "کہہ دیجیے ہم اس رحمٰن ذات پر ایمان لائے ہیں اور مدینہ میں ہدایت دینے والے کے تابعدار ہوگئے ہیں۔ 


اے میری عزیز بہن! اپنے گھر کی چار دیواری سے سوائے شدید ضرورت کے باہر نہ نکلیں کہ آپ کا گھر سعادت کا ایک راز ہے۔ اللہ تعالیٰ فرماتے ہیں: "وَقَرْنَ فِي بُيُوتِكُنَّ"  کہ آپ عورتیں اپنے گھروں میں ٹھہری رہیے۔" 


آپ کے گھر میں ہی کھانے پینے کا سامان ہے اور آپ گھر میں ہی اپنے شرف اور وقار و حیاء کی حفاظت کر سکتی ہیں۔ ہمیشہ گری ہوئی عورت ہی کسی ضرورت کے بغیر بازار کی طرف نکلتی ہے، جس کا عزم یہ ہوتا ہے کہ ہر نئے فیشن اور زمانہ کے ساتھ چلے، بڑی مارکیٹوں میں گھومے اور ہر نئی چیز کے بارے میں معلومات حاصل کرے۔ ایسی عورت کے پاس دین کا کوئی شوق نہیں ہے، نہ علم و معرفت ہے اور نہ ثقافت۔ ایسی ہی عورتوں کی زندگی فضول ہے، جن کی نظر صرف اچھے کھانے پینے اور اچھا پہننے پر رہتی ہے۔ 


آپ خیال کیجیے کہ اپنے گھر کو مت چھوڑیں، کیونکہ یہی خوشیوں کا گھر ہے، امن و راحت کا محل اور انس و سلامتی کی منزل ہے۔ لہٰذا آپ اپنے گھر کی اچھائی کے لیے بنیاد بن جائیے۔


(ماخوذ از: دنیا کی سعادت مند عورت)


(اپنے گھر کی چار دیواری کو لازم پکڑیں، بغیر کسی ضروت کے باہر نہ جائیں۔ اپنے راز اور گھریلو معاملات ایسے لوگوں کو مت بتائیں جو آپ کو ایسی رائے دیں جس سے کبھی سعادت حاصل نہیں ہو سکتی۔)


تحریر: راشد محمود عُفِیٙ عٙنْہ

(سکونِ  دل) 

http://telegram.me/AuratonKeyMasail
*===========================*
http://www.facebook.com/AuratonKeyMasail
*==========================*

Share this post


Link to post
Share on other sites

🌷آپ دنیا کی خوبصورت عورت بن سکتی ہیں🌷


 وکلُّ الحادثاتِ و اِن تناھتْ۔۔۔۔ فموصولُٗ بھا فرجُٗ قریبُ

شعر کا مفہوم ہے کہ "دنیا کی ہر مشکل خواہ وہ جس قدر بھی کو اس کے ساتھ نصرت بھی بندھی ہوئی ہے۔"


آپ اپنی خوبصورتی کے سبب دھوپ کی روشنی سے بھی زیادہ چمکدار ہیں۔ اپنے اخلاق کی وجہ سے مُشک سے بھی زیادہ قیمتی ہیں۔ اپنی تواضع کی وجہ سے چاند سے بھی زیادہ بلند ہیں، لہٰذا آپ اپنے ایمان کی خوبصورتی کی حفاظت کیجیے اور قناعت و پردہ کی بھی حفاظت کیجیے۔ 


خوب جان لیجیے کہ آپ کے زیور سونا چاندی اور ہیرے نہیں بلکہ تہجد کے وقت کی دو رکعتیں، روزہ کی شدید پیاس اور وہ خفیہ صدقہ ہے جس کا علم صرف اللہ تعالی کو ہے۔ وہ آنسو ہیں جن سے گناہ دھلتے ہیں اور وہ لمبا سجدہ ہے جو اللہ تعالیٰ کی تعظیم کے لیے کیا جاتا ہے۔ اور اللہ تعالی سے وہ حیا ہے جو شیطانی وساوس سے بچاتی ہے۔ لہٰذا آپ تقویٰ کا لباس زیب تن کیجیے، کیونکہ آپ پوری دنیا میں خوبصورت عورت ہیں، چاہے آپ کے کپڑے بوسیدہ ہی کیوں نہ ہوں۔ 


آپ حیا کا برقع پہن لیں، کیونکہ آپ دنیا کی اچھی عورت ہیں، چاہے آپ کے پاس پہننے کے لیے عمدہ جوتی نہ ہو۔ آپ ہمیشہ غیر مسلم اور گناہگار عورتوں سے دھیان رکھیے کہ یہ جہنم کے انگارے ہیں۔


(ماخوذ از: دنیا کی سعادت مند عورت)


(اللہ تعالیٰ ہم سب کو اپنے ایمان کی حفاظت کرنے اور اس کی خوبصورت صفات کو اپنانے کی توفیق عطا فرمائے۔ اور ایمان کی حالت میں اس دنیا سے اٹھائے۔ آمین!)

تحریر: راشد محمود عُفِیٙ عٙنْہ

(سکونِ  دل) 

http://telegram.me/AuratonKeyMasail
*===========================*
http://www.facebook.com/AuratonKeyMasail
*==========================*

Share this post


Link to post
Share on other sites

🌷اپنے اہم کاموں کے مطابق وقت کی تقسیم کیجیے🌷

 

 

 عسی الھم الذی أمسیتُ فیہ۔۔۔۔ یکون ورائہ فرجُٗ قریبُ

 

شعر کا مفہوم ہے کہ "جس غم میں میں نے شام کا وقت پایا ہے، کاش کہ اس غم کے پیچھے نصرت قریب ہو۔"

 

نفع مند کتاب پڑھ کر خود کو آزمائیے۔ قرآن مجید کی تلاوت کرکے اپنا جائزہ لیجیے۔ نامعلوم قرآن مجید کی کوئی آیت آپ پر اثر کر جائے جو آپ کے خوابیدہ ضمیر کو جگا دے۔ اس آیت کی برکت سے ہدایت و نور حاصل ہو جائے اور آپ کی پریشانی اور شکوک و شبہات اور ناامیدی کے سائے دور ہو جائیں۔ 

 

 

ہمارے حبیب صلی اللہ علیہ وسلم کی احادیث مبارکہ پڑھ کر دیکھیے۔ آپ کو معلوم ہوگا کہ شافی دوا اور علم نافع یہی ہے، جس کی بدولت آپ گمراہی سے بچ سکتی ہیں، کیونکہ آپ کی دوا کتاب و سنت میں ہے۔ آپ کی راحت ایمان میں ہے۔ آپ کی آنکھوں کی ٹھنڈک نماز میں ہے۔ آپ کے دل کی سلامتی رضامندی کے ساتھ ہے۔ آپ کا سکون قناعت میں ہے۔ آپ کی خوبصورتی مسکراہٹ کے ساتھ ہے۔ آپ کی عزت پردہ میں ہے۔ اور آپ کا اطمینان اور حوصلہ افزائی اللہ تعالیٰ کے ذکر میں ہے۔

 

(ماخوذ از: دنیا کی سعادت مند عورت)

 

 

(اللہ تعالیٰ ہم سب کو روزانہ قرآن مجید کی تلاوت کرنے، آیات قرآنی میں غور و فکر کرکے ان پر عمل کرنے اور احادیث مبارکہ کی روشنی صحابہ و صحابیات کے مطابق اپنی زندگی کو ڈھالنے کی توفیق عطا فرمائے۔ آمین!)

 

تحریر: راشد محمود عُفِیٙ عٙنْہ

 

(سکونِ دل) 

 

http://telegram.me/AuratonKeyMasail

*===========================*

http://www.facebook.com/AuratonKeyMasail

*==========================*

Share this post


Link to post
Share on other sites

🌷نجات دینے والی کشتی پر سوار ہو جائیں🌷

 

 یا الہ الکون قداسلمتُ لک۔۔۔۔۔ربِّ فارحم ضعفنا ماأرحمک

شعر کا مفہوم ہے کہ "اے الٰہ العالمین! میں نے خود کو آپ کے حوالے کر دیا ہے، تو اے رب آپ میرے ضعف پر رحمت فرمائیے کہ آپ بہت زیادہ رحم کرنے والے ہیں۔"

میں نے کئی لڑکے لڑکیوں اور مرد و خواتین کی زندگیوں کا مطالعہ کیا ہے تو میں نے کہا: ہائے افسوس! مسلمان مرد اور مسلمان عورتیں، مومن مرد اور مومن عورتیں، روزہ دار مرد اور روزہ دار عورتیں، عبادت گزار مرد اور عبادت گزار عورتیں کہاں ہیں؟ 

کیا یہ محدود زندگی اس قدر کشادہ ہو سکتی ہے کہ اسے گناہوں سے آلودہ کیا جائے اور اسے وحشیانہ طور پر ضائع کیا جائے؟ کیا ہماری اس زندگی کے علاوہ بھی کوئی اور زندگی ہے؟ اور کیا ان دنوں کے علاوہ اور کوئی دن ہیں؟ کیا ہم نے اللہ سے وعدہ لیا ہوا ہے کہ ہم سپردِ خاک نہیں کیے جائیں گے؟  

اللہ کی قسم! ہرگز ایسا نہیں ہے، بلکہ یہ جھوٹی تمنا ہے اور غلط وہم و گمان ہے۔ لہٰذا اپنے نفس کا محاسبہ کرتے رہیں اور جلدی قدم اٹھائیں تاکہ نجات کے قافلہ سے مل جائیں اور خود کو نجات کی کشتی پر سوار کر لیں۔

(ماخوذ از: دنیا کی سعادت مند عورت)

(اللہ تعالیٰ ہم سب کو ایمان والی صفات کاملہ پر عمل کرنے اور اپنی بندگی کرتے رہنے کی توفیق دے کر نجات پانے والے انسانوں میں شامل فرمائے۔ آمین)

تحریر: راشد محمود عُفِیٙ عٙنْہ

(سکونِ  دل) 

http://telegram.me/AuratonKeyMasail
*===========================*
http://www.facebook.com/AuratonKeyMasail
*==========================*

Share this post


Link to post
Share on other sites

🌷سعادت کی کُنجی سجدہ ہے🌷

 

 ولستُ أری السعادۃ جمع مالِِ ۔۔۔۔۔ولکنَّ التقیَّ ھو السعیدُ

شعر کا مفہوم ہے کہ "میری سمجھ میں سعادت کا معنی مال جمع کرنا نہیں ہے لیکن متقی شخص ہی اصل میں سعادت مند ہے۔ 


آج کی نوٹ بک میں سعادت کا پہلا صفحہ فجر کی نماز ہے۔ آپ اپنے دن کی ابتداء صبح کی نماز سے کریں، پھر اس کے بعد اللہ تعالٰی کی زمہ داری اور حفاظت میں داخل ہو جائیے۔ پھر اللہ تعالیٰ آپ کو ہر پریشانی سے محفوظ رکھیں گے، ہر نیکی کی طرف ہدایت سے نوازیں گے اور ہر برائی سے بچائیں گے۔ 


اللہ تعالیٰ اس دن کو مبارک نہیں کرتے جس میں آپ نے صبح کی نماز نہ پڑھی ہو، کیونکہ قبولیت کی سب سے پہلی علامت اور کامیابی کی کتاب کا عنوان یہی چیز ہے۔ 

وہ عورت یقیناً خوش نصیب ہے جس نے فجر کی نماز اپنے وقت پر ادا کی ہے۔ اور وہ عورت خسارہ میں ہے جس نے صبح کی نماز کو اہمیت نہیں دی۔


(ماخوذ از: دنیا کی سعادت مند عورت)

(اللہ تعالیٰ ہمیں موت تک روزانہ پانچ وقت کی نمازیں وقت پر ادا کرنے کی توفیق عطا فرمائے۔ اور ہمیں اپنے سامنے سجدہ رکھ کر نیک بختوں اور خوش نصیبوں میں شامل رکھے۔ آمین)

تحریر: راشد محمود عُفِیٙ عٙنْہ

(سکونِ  دل) 

http://telegram.me/AuratonKeyMasail
*===========================*
http://www.facebook.com/AuratonKeyMasail
*==========================*

Share this post


Link to post
Share on other sites

🌷وہ ہرگز سعادت مند نہیں ہیں🌷


 اشتدی أزمةُ تنفرجی۔۔۔قدآذن لیلُک بالبلجِ
 

شعر کا مفہوم ہے کہ "مصیبت چاہے کتنی بھی عروج پر پہنچ جائے وہ زائل ہو کر ہی رہے گی اور تمہاری رات کے جانے کا وقت آنے والا ہے۔" 

رات اپنا سامان اکٹھا کرکے روانہ ہورہی ہے اور صبح پہنچ رہی ہے۔ ان کی طرف نہ دیکھنا جنہوں نے اپنی زندگی کو لغویات و فیشن اور فضول خرچی میں لگا رکھا ہے، کیونکہ ایسے لوگوں کے حال پر دل خوش نہیں ہوتا بلکہ رنجیدہ ہوتا ہے۔ 

کچھ لوگ ایسے بھی ہیں جو ہر وقت اپنی خواہشات و نفسانی لذات کے لیے مال خرچ کرتے ہیں اور اپنی لذت حاصل کرنے کے لیے پوری جدوجہد کرتے ہیں اور ہر لذت کے پیچھے بھاگتے ہیں، خواہ وہ حلال ہو یا حرام۔ یہ لوگ ہرگز سعادت مند نہیں ہیں بلکہ غم و پریشانی اور تنگی میں ڈوبے رہتے ہیں کیونکہ جس کسی نے دین کے علاوہ کوئی اور راستہ اختیار کیا اور جس کسی نے گناہوں کا ارتکاب کیا تو وہ ہرگز سعادتمندی نہیں پاسکے گا۔

آپ اس بھول میں نہ رہیے کہ جنہوں نے اپنی زندگی کو لغویات و خواہشات اور عیش پرستی میں لگا رکھا ہے وہ خوش رہتے ہیں۔ ایسا ہر گز نہیں بلکہ بعض فقیر جو بوسیدہ جھونپڑیوں اور مٹی سے بنے مکانوں میں رہتے ہیں وہ کہیں زیادہ ان لوگوں سے سعادت مند ہیں جو ریشمی بستروں پر سوتے ہیں اور عالی شان محل میں رہتے ہیں۔ ہر وہ ایمان والی، عبادت گزار اورفقیہ عورت اس خاتون سے کہیں زیادہ سعادت مند ہے جو دین کے دشمنوں کی رائے کے مطابق چل رہی ہے۔

(ماخوذ از: دنیا کی سعادت مند عورت)


(سعادت تو آپ کے اندر موجود ہے، بس اس کو کام میں لانے کی کوشش کرتے رہیں۔)


تحریر: راشد محمود عُفِیٙ عٙنْہ

(سکونِ  دل) 

http://telegram.me/AuratonKeyMasail
*===========================*
http://www.facebook.com/AuratonKeyMasail
*==========================*

Share this post


Link to post
Share on other sites

🌷 دعا ہمیشہ مصیبت کو دور کرتی ہے🌷


 قدیُنْعِمُ اللہ بالبلوی وَاِنْ عَظُمَتْ۔۔۔۔۔ ویبتلی اللہ بعض القومِ بالنِّعَمِ

شعر کا مفہوم ہے کہ "کبھی اللہ تعالیٰ مصیبت کو نعمت بنا دیتے ہیں، خواہ وہ کتنی بھی بڑی ہو اور کبھی بعض لوگوں پر نعمت کو مصیبت بنا دیتے ہیں۔" 


میرا ایک دوست عبادت گزار تھا۔ اس کی بیوی کو کینسر کی بیماری ہوگئی۔ ان کے تین بیٹے تھے۔ دنیا خوشحالی کے باوجود ان پر تنگ ہوگئی۔ ان حالات میں ایک عالم نے ان کو تہجد کے وقت دعا اور استغفار کی ترغیب دی اور آب زم زم پر دم کر کے بیوی کو پلانے کو کہا۔ چنانچہ اس دوست نے ایسا ہی کیا۔ اس کی بیوی آب زمزم پیتی رہی اور دونوں میاں بیوی نماز فجر کے بعد طلوع آفتاب تک اور مغرب کی نماز کے بعد سے عشاء تک دعا و استغفار کرتے رہے۔ اس کی برکت سے اللہ تعالی نے عورت کو شفائے کاملہ عطا فرما دی۔ 


اے میری بہن! اگر بیماری آجائے تو اللہ تعالیٰ کی طرف رجوع کریں۔ کثرت سے توبہ واستغفار کریں۔ اللہ تعالیٰ سے اچھی امید رکھیں۔ اللّٰہ تعالیٰ ہی دعاؤں کو قبول کرنے والے اور مصائب کو دور کرنے والے ہیں۔ 


اللہ تعالیٰ فرماتے ہیں: 
 اَمَّنۡ یُّجِیۡبُ الۡمُضۡطَرَّ اِذَا دَعَاہُ وَ یَکۡشِفُ السُّوۡٓءَ.
ترجمہ: بھلا وہ کون ہے کہ جب کوئی بےقرار اسے پکارتا ہے تو وہ اس کی دعا قبول کرتا ہے، اور تکلیف دور کردیتا ہے۔  (سورہ النمل: 62)


(ماخوذ از: دنیا کی سعادت مند عورت)


(ہمیں چاہیے کہ دعا کو لازم پکڑیں۔ خوشی ہو یا غم ہر حال میں اللہ تعالیٰ ہی سے مدد و نصرت طلب کرتے رہیں۔ )


تحریر: راشد محمود عُفِیٙ عٙنْہ

(سکونِ  دل) 

http://telegram.me/AuratonKeyMasail
*===========================*
http://www.facebook.com/AuratonKeyMasail
*==========================*

Share this post


Link to post
Share on other sites

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now

×